تازہ ترین

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) گورنر سندھ محمد زبیر اور کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل شاہد بیگ مرزا کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں کراچی آپریشن کو ہر حال میں منطقی انجام تک پہنچانے کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گورنر سندھ اور کور کمانڈر کراچی کی ملاقات میں سندھ میں امن و امان کی صورتحال سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال ہوا جبکہ کراچی آپریشن کو ہر حال میں منطقی انجام تک پہنچانے کے عزم کا اعادہ بھی کیا گیا۔ اس موقع پر گورنر سندھ نے کہا کہ صوبے میں امن کے لئے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بے مثال قربانیاں دیں، اب کراچی سرمایہ کاری کے لئے آئیڈیل شہر بن چکا ہے۔

کور کمانڈر کراچی کا کہنا تھا کہ امن و امان کی صورتحال خراب کرنے والوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام کے تحفظ اور سازگار حالات کے تسلسل کے لئے اقدامات جاری رکھیں گے۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ )انسپکٹر جنرل (آئی جی) سندھ پولیس اے ڈی خواجہ نے 'رخصت کے بعد دوبارہ ذمے داریاں سنبھال لیں اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت میں ہونے والے ایپکس کمیٹی کے 18ویں اجلاس میں شرکت کی۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت اے ڈی خواجہ کو ہٹانا چاہتی ہے، لیکن وفاقی حکومت اس کے خلاف ہے۔تاہم وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا اس معاملے پر کہنا تھا کہ آئی جی سندھ 15 دن کی چھٹی پر گئے تھے اور انھوں نے خود اس کی درخواست دی تھی۔بعدازاں سندھ ہائی کورٹ نے حکم امتناع جاری کرتے ہوئے صوبائی حکومت کو اے ڈی خواجہ کو رخصت پر بھیجنے سے روک دیا تھا۔

یاد رہے کہ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ 19 دسمبر کو 'رخصت پر چلے گئے تھے، میڈیا رپورٹس کے مطابق آئی جی سندھ کو اس لیے 'جبری رخصت پر بھیجا گیا کیوں کہ سندھ حکومت کے پولیس کانسٹیبلز کی بھرتیوں اور پولیس افسران کی معطلی کے معاملے پر ان سے اختلافات تھے۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ 'آئی جی سندھ بڑے سکون کے ساتھ اجلاس میں بیٹھے تھے اور بار بار کہہ رہے تھے کہ مجھ پر سندھ حکومت کا کوئی دباؤ نہیں۔ایپکس کمیٹی کے اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے آئی جی سندھ پولیس اے ڈی خواجہ کو اسٹریٹ کرائمز کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم دے دیا۔وزیراعلیٰ سندھ نے آئی جی سندھ کو حکم دیا کہ 'مجھے اسٹریٹ کرائم فری کراچی چاہیئے۔اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ نے کراچی کے عوام کو ہر جرم کی شکایت پولیس اور رینجرز کی ہیلپ لائن پر درج کروانے کی بھی ہدایت کی۔

اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاقی حکومت نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کروانے میں مکمل تعاون نہیں کر رہی، ٹی وی پر ابھی تک دہشت گردوں کی خبریں چلتی ہیں، انٹرنیٹ کے غلط استعمال کی روک تھام بھی نہیں ہوسکی اور کالعدم تنظیموں کے لوگ ابھی تک کھلے عام جلسے کر رہے ہیں، لیکن وفاقی حکومت اس حوالے سے کوئی واضح پالیسی اختیار نہیں کر رہی۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وفاقی حکومت کو خط لکھا جائے کہ غیر قانونی اسلحہ بنانے کی فیکٹریوں اور دکانوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا جائے، کیونکہ سندھ میں اب تک جتنا بھی اسلحہ پکڑا گیا، اس کا 40 فیصد مقامی طور پر تیار کیا گیا تھا۔

ہوم سیکریٹری سندھ شکیل منگنیجو نے اجلاس کو بتایا کہ:

سندھ سے گرفتار 16 تکفیری دہشت گردوں کو پھانسی دی جاچکی ہے۔
فوجی عدالتوں کی جانب سے 16 تکفیری دہشتگردوں کو سزائے موت سنائی جاچکی ہے اور مزید 19 مقدمات زیر سماعت ہیں۔
سندھ کی لیگل کمیٹی نے 9 مزید مقدمات فوجی عدالتوں کو بھیجنے کی منظوری دے دی ہے۔
سندھ حکومت کی سفارش پر 62 کالعدم تنظیموں کے نام فرسٹ شیڈول میں ڈالے گئے۔
سندھ میں 92646 افغان شہریوں کی رجسٹریشن ہوئی۔
سندھ نے 94 مدارس کی فہرست وزارت داخلہ کو بھیجی ہے، ان کو بھی فرسٹ شیڈول میں ڈالا جائے گا۔
581 مختلف افراد کا نام فورتھ شیڈول میں ڈالا گیا۔
کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل شاہد بیگ اور ڈی جی رینجرز سندھ محمد سعید نے پہلی مرتبہ اجلاس میں شرکت کی، اس موقع پر سینئر وزیر نثار کھوڑو، چیف سیکریٹری رضوان میمن، مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو، گورنر سندھ کے نمائندے صالح فاروقی، مشیر قانون مرتضٰی وہاب، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثناء اللہ عباسی، ہوم سیکریٹری شکیل منگنیجو اور دیگر موجود تھے۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ )وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے صوبائی اپیکس کمیٹی کے اجلاس کے دوران وفاق کی جانب سے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد سے متعلق اپنی ذمہ داریاں پوری نہ کرنے پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

زرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی سربراہی میں صوبائی ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل شاہد بیگ مرزا، ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل محمد سعید ، صوبائی چیف سیکریٹری، سینیئر وزیر نثار کھوڑو اور مشیر اطلاعات مولا بخش چانڈیو کے علاوہ آئی جی سندھ اللہ ڈنو خواجہ نے بھی شرکت کی، کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل شاہد بیگ مرزا اور ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل محمد سعید نے اپنا چارج سنبھالنے کے بعد پہلی مرتبہ ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کی جب کہ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے بھی 12 روز کی جبری رخصت کے بعد دوبارہ چارج سنبھالا ہے۔

اجلاس میں سیکرٹری داخلہ نے شرکا کو بتایا کہ 16 تکفیری دہشت گردوں کو ملٹری کورٹ سزائے موت کی سزا دے چکی ہے جب کہ 19 مقدمات اب بھی زیر سماعت ہیں۔ سندھ کی لیگل کمیٹی نے مزید 9 کیسز ملٹری کورٹس کے لئے کلئیر کئے ہیں۔

اجلاس کے بعد مولا بخش چانڈیو نے میڈیا بریفنگ میں کہا کہ اجلاس کے دوران کراچی میں امن کی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کیا گیا ہے، سندھ میں اداروں کو لڑانے کی کوشش کی گئی لیکن ایپکس کمیٹی کے اجلاس سے یہ تاثر ختم ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اجلاس میں وزیراعلیٰ نے تحفظات کا اظہار کیا ہے کہ وفاق نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد سے متعلق اپنی ذمہ داری پوری نہیں کررہا، کالعدم تکفیری دہشتگرد تنظیموں سے متعلق وفاق کی کوئی واضح پالیسی نہیں۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ ) حب الوطنی کا تقاضہ یہ ہے کہ پاکستان سے دہشت گردی، کرپشن اور لاقانونیت کا خاتمہ کیا جائے، ہر وہ آواز جس سے تفرقہ کی بو آئے دشمن کی آلہ کار ہے، علماء کرام اتحاد و وحدت کے پیغام کا پرچار کرکے دشمن کی سازشوں کو ناکام بنائیں، آرمی چیف جنرل قمر باجوہ پاکستان کی سالمیت کی خاطر ملک کے اثاثوں پر حملے کرنے والے تکفیری دہشت گردوں کیخلاف آپریشن کا آغاز کریں۔

زرائع کے مطابق ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے سیکریٹری جنرل سید میثم عابدی نے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔ اس موقع پر علامہ نشان حیدر ساجدی، علامہ علی انور جعفری، علامہ مبشر حسن، علامہ صادق جعفری، کاظم عباس اور میر تقی ظفر سمیت دیگر رہنما بھی موجود تھے۔ میثم عابدی نے شرکائے اجلاس گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج موجودہ حالات میں ضروری ہے کہ پوری پاکستانی قوم اپنے وطن سے دہشت گردی، کرپشن اور لاقانونیت کے خاتمے کیلئے متحد ہو،جہاں کرپشن ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کررہی ہے تو وہیں دہشت گردی کا شکار محب وطن عوام کو ظالموں کی صف میں کھڑا کرنے کی سازشیں ہورہی ہیں۔

میثم عابدی کا مزید کہنا تھا کہ انصاف کا تقاضہ تو یہ ہے کہ ظالم کو اس کے ظلم کی سزا دی جائے اور مظلوم کی داد رسی کی جائے، لیکن ہمارے ریاستی اداروں کا دستور ہی نرالہ ہے کہ بیلنس پالیسی کے نام پر محب وطن عوام کو دہشت گردوں کے برابر کھڑا کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے ریاستی ادارے پاکستان کی سلامتی چاہتے ہیں تو کالعدم جماعتوں کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کرتے ہوئے پاکستان سے دہشت گردی، کرپشن اور لاقانونیت کا خاتمہ کریں۔ ایم ڈبلیو ایم کراچی کے سیکریٹری جنرل نے آرمی چیف جنرل قمر باجوہ سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ پاکستان کی سالمیت کی خاطر ملک کے اثاثوں پر حملے کرنے والے دہشت گردوں کیخلاف آپریشن کا آغاز کریں، تاکہ وطن کو دہشت گردی سے نجات دی جاسکے، اور ملک کے باسی امن و سکون سے زندگی گزار سکیں۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ )ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل محمد سعید کا کہنا ہے کہ کراچی میں پائیدار امن کو یقینی بنائیں گے اور اس کیلئے دہشت گردوں اور عسکری ونگز سمیت بھتہ خوروں کے خلاف آپریشن جاری رہے گا۔

زرائع کے مطابق ڈی جی سندھ رینجرز میجر جنرل محمد سعید نے کراچی میں قائم رینجرز کے مختلف سیکٹرز کا دورہ کیا اور اس دوران انہوں نے رینجرز افسران اور جوانوں سے ملاقاتیں کیں، نئے ڈی جی رینجرز نے کراچی میں امن کی بحالی کیلئے سابق ڈی جی رینجرز لیفٹیننٹ جنرل بلال اکبر کے اقدامات کو سراہا۔ ڈی جی رینجرز میجر جنرل محمد سعید نے افسران و جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں امن کی بحالی کیلئے پاکستان رینجرز کا کردار اہم ہے، ہمیں دہشتگردی میں ملوث اندرونی و بیرونی طاقتوں کا پورا ادراک ہے، کراچی میں پائیدار امن کو یقینی بنائیں گے اور اس کیلئے دہشتگردوں، عسکری ونگز، اغوا کاروں اور بھتہ خوروں کے خلاف آپریشن جاری رہے گا۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ ) وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ کراچی آپریشن کے اچھے نتائج نکل رہے ہیں اور ہم کسی کو کراچی کا امن تباہ کرنے نہیں دیں گے۔

زرائع کے مطابق وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی میں کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل شاہد بیگ مرزا نے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے ملاقات کی، ملاقات میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن جاری رکھنے کی حکمتِ عملی سمیت کراچی کے امن کو مستحکم کرنے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ کراچی کے امن کیلئے ہم نے بہت قربانیاں دی ہیں، اداروں کے درمیان تعاون کو مستحکم کیا ہے، کراچی آپریشن کے اچھے نتائج نکل رہے ہیں اور ہم کسی کو کراچی کا امن تباہ کرنے نہیں دیں گے۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ )پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ کراچی پاکستان کا اقتصادی مرکز ہے، کراچی میں امن و امان کی صورتحال ملک بھر کی اقتصادی صورتحال پر اثرانداز ہوتی ہے، مستقل امن تک کراچی آپریشن جاری رہے گا اور آپریشن میں حاصل کامیابیوں کو برقرار رکھا جائے گا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کور ہیڈ کوارٹر اور رینجرز ہیڈ کوارٹر کراچی کا دورہ کیا۔ اس موقع پر آرمی چیف کو کراچی سمیت سندھ کی موجودہ امن و امان کی صورتحال پربریفنگ دی گئی اور انہیں آپریشن کی اب تک کی کامیابیوں اور آیندہ کےلائحہ عمل سے متعلق آگاہ کیا گیا۔آرمی چیف نے کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں واضح بہتری کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاک فوج، رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں نے صورت حال بہتر بنانے میں اہم کردارادا کیا ہے۔ امن کے لیے کراچی کے عوام کی قربانیاں بھی قابل تحسین ہیں۔ کراچی پاکستان کا اقتصادی مرکز ہے، کراچی میں امن و امان کی صورتحال ملک بھر کی اقتصادی صورتحال پر اثرانداز ہوتی ہے، مستقل امن تک کراچی آپریشن جاری رہے گا اور آپریشن میں حاصل کامیابیوں کو برقرار رکھا جائے سگا۔

اس سے قبل چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے مزار قائد پر حاضری کے دوران پھول رکھے اور فاتحہ خوانی سمیت بانی پاکستان کو خراج عقیدت پیش کیا۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ )میجرجنرل محمد سعید کو ڈی جی رینجرز سندھ جب کہ میجر جنرل ندیم انجم کو آئی جی ایف سی بلوچستان تعینات کردیا گیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک فوج میں تقرریوں اور تبادلوں کا سلسلہ جاری ہے جس کے تحت میجر جنرل محمد سعید کو لیفٹیننٹ جنرل بلال اکبر کی جگہ ڈی جی رینجرز سندھ تعینات کردیا گیا جب کہ لیفٹیننٹ جنرل شیر افگن کی جگہ میجر جنرل ندیم انجم کو آئی جی ایف سی بلوچستان تعینات کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 7 میجر جنرلز کو لیفٹیننٹ جنرلز کے عہدے پر ترقی دی جن میں ترقی پانے والے تمام افسران کی نئی پوسٹنگ بھی کردی گئی ہے اور ان ہی تقرریوں اور تبادلوں کے تحت ڈی جی رینجرز سندھ بلال اکبر کو لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دیئے جانے کے بعد جی ایچ کیو میں چیف آف جنرل اسٹاف تعینات کیا گیا ہے اور آئی جی ایف سی بلوچستان لیفٹیننٹ جنرل شیرافگن کورکمانڈر بہاولپور لگادیئے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ کورکمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار کو ڈی جی آئی ایس آئی تعینات کیا گیا ہے۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ ) کراچی: پولیس نے شہر قائد کے مختلف علاقوں میں کارروائیوں کے دوران کالعدم تحریک طالبان اور لشکر جھنگوی کے 5 دہشت گردوں کو گرفتار کر کے اُن کے قبضے سے اسلحہ برآمد کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق اورنگی ٹاؤن 11 نمبر قبرستان کے قریب تھانہ اقبال مارکیٹ کی پولیس نے خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے 5 دہشت گردوں کو گرفتار کیا جن کے قبضے سے اسلحہ برآمد کیا گیا ہے۔

چھاپے کے دوران گرفتار ہونے والے دہشتگردوں کی شناخت شہزاد، نور محمد، عبدالمنان، ارسلا خان اور سلام خان کے نام سے ہوئی جن کا تعلق تحریک طالبان پاکستان سے ہے، ملزمان کے قبضے سے کلاشنکوف، نائن ایم ایم پستول ، 4 دستی بم کے علاوہ دھماکہ خیز موار اور آدھا کلو بال بیرنگ بھی برآمد کیے گیے ہیں۔

Kaaladam Tanzeem Ke Karenday Orangi Town Se Geraftaar

پولیس کے مطابق کارروائی کے دوران ڈیڑھ بارودی فیتا برآمد ہوا ہے جو اس بات کی نشاندہی کرتا ہے کہ ملزمان بم بنانے کے ماہر تھے، گرفتار افراد کے خلاف انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمے کا اندراج کرلیا گیا ہے۔ دوسری جانب فیڈرل بی ایریا کے صنعتی علاقے میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے کالعدم لشکرجھنگوی سے تعلق رکھنے والے ایک کارندے کو گرفتار کر کے اُس کے قبضے سے کلاشنکوف، دستی بم اور گولیاں برآمد کرلی ہیں۔

شیعہ نیوز ( پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ ) پنجاب میں کالعدم تکفیری دہشتگرد گروہوں کے ٹھکانوں کے خاتمے کیلئے آپریشن ناگزیر ہے۔ سندھ میں آپریشن ہو سکتا ہے تو پھر صوبہ پنجاب میں تکفیری دہشتگردوںکے خلاف کارروائی میں کیا رکاوٹ ہے۔

زر ائع کے مطابق ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی پنجاب کے رہنما راؤ راحت علی خان نے سرگودہا میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ان کا کہنا تھا کہ نون لیگ کی حکومت کا کالعدم تکفیری دہشتگرد گرہوں کی پناہ گاہوں کو نظرانداز کرنے کا امتیازی رویہ عوام میں شکوک و شبہات پیدا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا تمام قومی اداروں کو ذاتی مفادات کیلئے استعمال کرنا آمرانہ طرز حکومت کا منہ بولتا ثبوت ہے، اسوقت کرپشن اور لوٹ مار کے خاتمہ کیلئے بنائے گئے ادارے بھی حکومتی کرپشن کا تحفظ کر رہے ہیں، لیکن تحریک انصاف کرپشن کے خلاف جدوجہد کو منطقی انجام تک پہنچائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی اسوقت حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کر رہی ہے، جبکہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی دونوں ملی بھگت سے قومی وسائل ہڑپ کر رہے ہیں۔