شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) برطانیہ کی لیبر پارٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ یمن پر کلسٹر بم برسانے کی بنا پر سعودی عرب پر ہوائی حملہ کر دیا جانا چاہئے۔

برطانیہ میں حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت لیبر پارٹی کے سربراہ جرمی کوربین نے کیمیائی ہتھیاروں کے بہانے شام پر غیر قانونی حملے میں برطانیہ کے شامل ہونے پر مبنی تھریسا مئے کی حکومت کے فیصلے اور یمن کے بارے میں اس کے دوہرے معیار پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن میں جس طرح سے سنگین انسانی بحران پیدا کیا گیا ہے اس کے پیش نظر دیگر ملکوں کو یہ حق پہنچتا ہے کہ وہ سعودی عرب کے فوجی اور فضائی اڈوں پر حملہ کر دیں کیونکہ سعودی عرب، یمن پر کلسٹر اور فاسفورس بموں سے حملہ کر رہا ہے-

انہوں نے دارالعوام میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے تین اداروں نے جنوری میں اعلان کیا کہ بحران یمن، دنیا کا سب سے بدترین بحران ہے اس لئے برطانوی وزیرا‏‏عظم کو یہ وعدہ کرنا ہو گا وہ یمن پر سعودی عرب کی بمباری کی حمایت کرنا بند کر دیں گی-

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے فوجی عدالتوں سے سزا پانے والے دس دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی۔

سزائے موت کی توثیق میں معروف قوال اور مداح اہلبیت ؑ امجد صابری کے قاتل بھی شامل ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے پانچ دہشت گردوں کی عمر قید کی سزا کی بھی توثیق کر دی۔

آئی ایس پی آر کے جاری کردہ بیان کے مطابق تمام دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیموں سے تھا اور انہوں نے مجسٹریٹ کے سامنے اعتراف جرم بھی کیا تھا جس کے بعد خصوصی فوجی عدالتوں نے انہیں موت کی سزا سنائی تھی۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) قندہاری بازار میں جمال الدین افغانی روڈ کے کارنر پر نامعلوم افراد کی مری آباد سے ہزارہ ٹاون جانے والی پیلی ٹیکسی پر فائرنگ جس میں نذرحسین ولد نوروز علی عمر 50 سال قوم ہزارہ جاں بحق جبکہ گل حسین ولد عبدالرسول عمر 35 قوم ہزارہ زخمی ، ٹیکسی میں 5 افراد سوار تھے، جس میں 3 محفوظ رہے ہیں جن کا تعلق ہزارہ برادری سے ہیں۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں کالعدم تکفیری دہشتگردوں کو حکومتی ایوانوں میں ہونے والی تقریبات میں مدعوکیا جارہا ہے جس کے بعد کراچی اور کوئٹہ میں ایک بار پھر شیعیان علی کے قتل کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان نے وال اسٹریٹ جنرل کے ساتھ گفتگو میں امریکہ اور اسرائیل کی نیابت میں ایران پر آئندہ دس سے 15 سال کے دوران فوجی حملے کا اعلان کردیا ہے۔

محمد بن سلمان نے کہا کہ اگر ایران کے خلاف اقتصادی پابندیاں مؤثر ثابت نہ ہوئیں تو سعودی عرب امریکہ اور اسرائیل کی نیابت میں آئندہ 10 سے 15 سال کی مدت میں ایران کے خلاف فوجی کارروائی کرےگا۔

اس سے قبل محمد بن سلمان نے امریکی اخبار نیویارک ٹائمز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر ایران نے ایٹم بنایا تو سعودی عرب بھی فوری طور پر ایٹم بم بنا لےگا۔ تجزیہ نگارون کے مطابق سعودی عرب اپنی پوری طاقت اور قدرت اسرائیل کے بجائے ایران کے خلاف استعمال کرکے امریکہ اور اسرائیل کی عملی مدد کررہا ہے۔ اسلامی ماہرین کے مطابق سعودی عرب حقیقی اسلام کے فروغ کے بجائے امریکی اور یزیدی اسلام کو فروغ دے رہا ہے اور اس میں اسے امریکہ اور اسرائیل کی حمایت حاصل ہے اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان نے اس کا اعتراف بھی کرلیا ہے۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) سعودی ولیعہد محمد بن سلمان نے کہا ہے کہ وہ نہیں سمجھتے کہ شام کے اقتدار سے بشار اسد کو ہٹایا جاسکتا ہے۔

محمد بن سلمان نے امریکی جریدے ٹائم سے گفتگو میں اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ شام کے اقتدار میں بشار اسد باقی رہیں گے اور ان کا ہٹایا جانا ممکن نہیں، کہا کہ شام میں ایرانیوں کو کھلی چھوٹ دینا بشار اسد کے حق میں نہیں ہے۔
ایران، دمشق حکومت کی درخواست پر ہی شام میں موجود ہے اور وہ سعودی حمایت یافتہ دہشت گردوں کے مقابلے میں شامی فوج کے ساتھ تعاون کر رہا ہے۔

ایران کے تعاون کے نتیجے میں شام میں دہشت گردوں کی شکست ہی اس بات کا باعث بنی ہے کہ سعودی ولیعہد اس بات کا اعتراف کر رہے ہیں کہ بشار اسد کو اقتدار سے ہٹایا جانا ممکن نہیں ہے۔
دریں اثنا سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان نے شام میں امریکی فوج کے موجود رہنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل کے تحفظ کے لئے شام میں امریکی فوج کا باقی رہنا ضروری ہے۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ ایران ہمارا ہمسایہ و اسلامی برادر ملک ہے، جن کے ساتھ تاریخی، سیاسی، سماجی، ثقافتی، علمی اور مذہبی حوالے سے باہم احترام پر مبنی بہت ہی خوشگوار تعلقات قائم ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی میں ایران کے سابق وزیر خارجہ کمال خرازی سے ملاقات کے دوران کیا، ملاقات میں دو طرفہ تعلقات سمیت باہمی دلچسپی کے امور اور دونوں ممالک کے برادرانہ تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ایران کے سرمایہ کاروں کو سندھ میں سرمایہ کاری کے مواقع سے مستفید ہونے کی پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں سرمایہ کاری کیلئے سازگار فضا اور بھرپور کاروباری مواقع موجود ہیں، سندھ حکومت پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت بہت سے اہم منصوبوں پر کام کر رہی ہے، سرمایہ کاروں کو چاہیے کہ وہ مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرتے ہوئے دستیاب مواقع سے فائدہ اٹھائیں۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) شہر قائد کی انسداد دہشتگردی عدالت نے تین شیعہ اسیران کو سزائے موت، جبکہ دو کو اکیس اکیس سال قید کی سزا سنا دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی انسداد دہشتگردی عدالت کی خاتون جج نے اپنے فیصلے میں فرقان، بوتراب اور فیصل نامی شیعہ اسیران کو سزائے موت، جبکہ رفعت اور اظہر نامی شیعہ اسیران کو اکیس اکیس سال قید کی سزا سنائی ہے۔ پانچوں شیعہ اسیران سینٹرل جیل کراچی میں قید ہیں۔ اسیران کی جانب سے آئندہ چند روز میں سندھ ہائیکورٹ میں انسداد دہشتگردی عدالت کے فیصلے کیخلاف درخواست دائر کی جائے گی۔ اسیران کے خانوادوں کا کہنا ہے کہ ایک طرف تو کراچی سمیت ملک بھر میں ہم شیعہ مسلمانوں کو دہشتگردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور دہشتگردوں کو رہا کیا جا رہا ہے، جبکہ دوسری جانب ہمارے بے گناہ اسیران کو جھوٹے مقدمات میں پھنسایا جا رہا ہے۔

عدالتی کارروائی کے دوران اسیران کیخلاف کسی قسم کے ٹھوس ثبوت یا شواہد پیش نہیں کئے جا سکے، نہ ہی کوئی عینی شاہد گواہ پیش کیا جا سکا، یہاں تک کہ ہمارے اسیران کی ضمانت تک منظور ہوسکتی تھی، لیکن ہم نے ضمانت کروانے کے بجائے باعزت بری ہونے اور تمام جھوٹے مقدمات کے خاتمے کو ترجیح دی، تاکہ آئندہ دوبارہ کسی بھی بہانے سے ہمارے اسیران کو تنگ نہ کیا جائے، لیکن اچانک اسی دوران ہمارے اسیران کو سزائے موت و عمر قید جیسی سزا سنا دی گئی، ایسا محسوس ہوتا ہے کہ فیصلہ کسی دباؤ یا خوف کے نتیجے میں دیا گیا ہے، ہم اس فیصلے کے خلاف آئندہ چند روز میں سندھ ہائیکورٹ میں درخواست دائر کرینگے، ہمیں پوری امید ہے کہ ہائیکورٹ سے ہمیں ضرور انصاف ملے گا اور ہمارے تمام بے گناہ اسیران سارے جھوٹے مقدمات سے باعزت بری ہونگے۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس نے سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے متعدد فوجیوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا ہے۔

یمن سے موصولہ خبروں کے مطابق یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس کے اسنائپروں نے سعودی عرب کے جنوبی علاقے جیزان میں تین سعودی فوجیوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا۔
یمنی فوج نے جیزان میں ہی سعودی عرب کے اتحادی فوجیوں کے ٹھکانوں پر توپخانے سے گولہ باری کی۔
اس حملے میں سعودی عرب اور اس کے اتحادی فوجیوں کو خاصا جانی اور مالی نقصان ہوا۔
دوسری جانب یمن کے صوبہ تعز میں بھی یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس کے توپخانے کے یونٹ نے سعودی اتحادی فوجیوں کے ٹھکانوں پرحملہ کیا۔


اس درمیان یمنی فوج نے سعودی اتحادی فوجیوں کے ایک حملے کو تعز کے ہی علاقے الجرہ میں پسپا کردیا ہے۔
یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب کے ذریعے یمن کا چاروں طرف سے محاصرہ جاری رہنے کے باوجود یمن کی فوج اور عوامی رضاکارفورس کی دفاعی توانائیوں میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) ضلعی انتظامیہ گلگت کے سربراہ سمیع اللہ فاروق نے اپنے ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے کہا کہدہشتگرد گلگت میں شیعہ کمیونٹی پر حملہ کرنے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ دہشتگردوں کا مطلوبہ ہدف شیعہ علماء، رہنماء اور سرکردہ افراد ہوسکتے ہیں۔ لہٰذا شیعہ رہنماوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنی حفاظت کے پیش نظر غیر ضروری نقل و حرکت اور سرگرمیوں سے گریز کریں۔ ضلعی انتظامیہ کے سربراہ نے سکیورٹی تھریڈ پر مبنی نوٹیفکیشن گلگت کے نامور عالم دین علامہ آغا راحت حسین الحسینی، اسلامی تحریک کے صوبائی رہنماء شیخ مرزا علی، سابق صوبائی وزیر دیدار علی، مجلس وحدت مسلمین کے ترجمان الیاس صدیقی، انجمن امامیہ گلگت کے صدر شیر علی اور فقیر شاہ کے نام جاری کر دیا ہے۔

دوسری جانب ذرائع کے مطابق آغا راحت حسین الحسینی نے اسے ضلعی انتظامیہ کی جانب سے دھمکی قرار دیا ہے۔ ذرائع کا دعویٰ ہے کہ آغا راحت حسینی نے اس مراسلے کو ٹیکس کے خلاف جاری عوامی پرامن کوشش کو سبوتاژ کرنے کی حکومتی کوشش قرار دی ہے۔ انہوں نے واضح کیا ہے کہ گلگت میں امن و امان قائم ہے اور کسی قسم کا خطرہ نہیں۔ اگر کسی بھی شخصیت کے ساتھ ناخوشگوار واقعہ پیش آیا تو تمام تر ذمہ داری حفیظ الرحمان پر عائد ہوگی۔

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ)ایک جرمن اخبار کے مطابق ملک کے قومی سلامتی اجلاس میں خبردار کیا گیا ہے کہ دہشتگرد تنظیم داعش یورپی ممالک میں کیمیائی ہتھیاروں سے حملوں کی منصوبہ بندی کرسکتی ہے۔

جرمن روزنامہ "دی ولٹ" نے قومی سلامتی اجلاس کے حوالے سے لکھا ہے کہ اسلامی شدت پسند ممکن ہے کہ یورپ میں زہریلی گیس کے ذریعے حملوں کی منصوبہ بندی کریں۔

روز نامہ دی ولٹ نے کہا ہے کہ ایک غیر ملکی انٹیلیجنس ایجنسی نے یورپ کی سیکورٹی حکام کو خبردار کیا ہے کہ داعش اس طرح کے حملوں کے لیے اپنے کارکنوں پر زور دے رہی ہے کہ حملے سولفیڈ ھائڈروجن یا زہریلی گیس کہ جس کے ہوا میں منتشر ہوتے ہی ہزاروں افراد ہلاک ہو سکتے ہیں، سے استفادہ کریں۔

جرمن روزنامہ کے مطابق آسٹریلوی پولس نے جولائی کے مہینے میں داعش کے ساتھ تعلق کے شبہے میں چند افراد کو گرفتار کیا تھا جنہوں نے زہریلی گیس کے ساتھ حملوں کا پرگرام بنا رکھا تھا۔