25 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے صیہونی حکومت کا نام انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرنے والی حکومتوں کی بلیک لیسٹ میں شامل کرنے پر اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی تعریف کی ہے۔

اطلاعات کے مطابق فلسطین کے انفارمیشن سینٹر کے مطابق حماس کے ترجمان فوزی برہوم نے ایک بیان میں انسانی حقوق کونسل کے اقدام کو اہم قرار دیا اور کہا کہ بلیک لیسٹ میں صیہونی حکومت کا نام شامل کرنا غاصب صیہونی حکومت کے حقیقی چہرے کو بے نقاب اور فلسطینی عوام کی مظلومیت کی نشاندہی کرتا ہے۔

حماس کے ترجمان کے بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی اداروں کو چاہئے کہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے اس اقدام کی پیروی کر کے صیہونی حکومت کے عہدیداروں پر مقدمہ چلانے، انہیں ‎سزا دینے اور ساتھ ہی فلسطینی عوام کی حمایت کی کوشش کرنی چاہئیے۔

اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی لسٹ میں ایسی انتیس حکومتیں ہیں جو ہمیشہ انسانی حقوق کے کارکنوں کے خلاف نسل پرستانہ اقدامات انجام دیتی ہیں۔

اس درمیان خبروں میں کہا گیا ہے کہ صیہونی حکومت نے گذشتہ آٹھ برس کے دوران مقبوضہ فلسطین میں کم سے کم (۵۳) ترپن مساجد اور کلیساؤں کو مسمار کیا ہے۔

فلسطین کے انفارمیشن سینٹر نے خبردی ہے کہ صیہونی حکومت نے دوہزار نو سے اب تک مقبوضہ سرزمینوں میں مسلمانوں اور عیسائیوں کے مقدس مقامات پر حملے تیز کردیئے ہیں۔

Read more...
25 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) قانون نافذ کرنے والے اداروں نے پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد سے شدت پسند گروپ داعش کے جھنڈے قبضہ میں لیے ہیں۔

شام اور عراق میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروپ کے جھنڈے وفاقی دارالحکومت کی مصروف ترین شاہراہ ایکسپریس ہائی وے پر اقبال ٹاون کے مقام پر ایک پل پر لگائے گئے تھے۔

کالعدم تنظیم کے جھنڈے نامعلوم افراد کی جانب سے لگائے گئے جن پر داعش کا ”لوگو“ بھی بنا تھا۔ جھنڈوں پر”خلافت آ رہی ہے “ کے نعرے بھی درج تھے جس پر لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

پاکستان کے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے خبر کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی اسلام آباد سے رپورٹ طلب کر لی۔ وزارت داخلہ کے حکام کا کہنا ہے کہ کالعدم تنظیم کے جھنڈوں سے متعلق وفاقی وزیر داخلہ کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ تحقیقات کے دوران علاقے میں مختلف مقامات پر نصب کیمروں کی مدد سے ملوث افراد کو شناخت کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

داعش کے جھنڈے لگنے کا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں اس سے قبل گزشتہ سال نومبر میں داعش کے مونوگرام والے کچھ جھنڈے پی او ایف کمپلیس کے مرکزی دروازے کے قریب لہراتے پائے گئے تھے۔

اسلام آباد کے جس علاقے اقبال ٹاون میں کالعدم تنظیم داعش کے جھنڈے لگائے گئے اس سے دس منٹ کی مسافت پر وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے کا دفتر جبکہ وفاقی پولیس کا اسٹیشن بھی موجود ہے جبکہ یہ وہ راستہ ہے جہاں سے صدر، وزیراعظم سمیت تمام غیرملکی شخصیات سرکاری اہم عمارتوں سے ائیرپورٹ تک کا لازمی سفر کرتے ہیں۔

اسلام آباد میں اربوں روپے کی لاگت سے سیف سٹی منصوبہ شروع کیا گیا تھا جس میں دو ہزار سے زائد مقامات پر کیمرے نصب کیے گئے ہیں۔ لیکن پولیس کی ابتدائی تحقیقات کے مطابق اقبال ٹاؤن کے اس پل پر جہاں جھنڈا لگا، کوئی کیمرہ نصب نہیں تھا۔

ابھی تک پولیس اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کو معلوم نہیں ہو سکا کہ انتہائی محفوظ علاقے میں جھنڈے لہرانے والے کون ہیں اور نہ ہی اس حوالے سے گرفتاریاں سامنے آئی ہیں۔

Read more...
25 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) ڈی پی او لکی مروت خالد ہمدانی کے حکم پر امام بارگاہ حسینہ لکی مروت کے عزاداروں پر مجلس عزاء امام بارگاہ کے اندر منعقد کرنے پر لاٹھی چارج۔ یاد رہے کہ یہ امام بارگاہ ۱۹۶۴سے لکی مروت میں قائم ہے جس میں مرحوم قائد ملت جعفریہ علامہ سید محمد دہلویؒ اور علامہ سید نجم الحسن کراروی بھی تشریف لا چکے ہیں۔

شیعہ علماء کونسل خیبر پختونخوا کے صوبائی جنرل سیکرٹری آخونزادہ مظفر علی نے امام بارگاہ حسینہ لکی مروت کے عزاداروں پر ڈی پی او لکی مروت کے حکم پر لاٹھی چارج کی پر زور مذمت کی ہے۔ انھوں نے کہا ہے کہ آئین پاکستان، اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے چارٹرڈ اور دیگر ملکی قوانین کے تحت ہمارا یہ آئینی اور قانونی حق بنتا ہے کہ ہم جہاں چاہیں، جس جگہ چاہیں عزاداری کریں۔

انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے چئیر مین جناب عمران خان صاحب کہتے ہیں کہ میں نے خیبر پختونخوا پولیس کا کلچر تبدیل کر دیا ہے مگر ہمارے ساتھ اس صوبے میں جو کچھ ہو رہا ہے اس کی ذمہ دار تحریک انصاف کی صوبائی حکومت ہے۔ ہم ڈی پی او لکی مروت کو فوری عہدہ سے ہٹا کر جڈیشل انکوائری کا مطالبہ کرتے ہیں۔

تازہ ترین اطلاع کی مطابق ضلع پشاور میں مختلف تھانوں کے ذریعے عزاداروں کو نوٹس جاری کر دیے گئے جس میں یہ تحریر ہے کہ ’’ آپ اپنے گھروں کے اندر کوئی پروگرام منعقد نہیں کر سکتے اور منت ، نذر ، نیاز کے نشان بھی نہیں برآمد کر سکتے‘‘ صوبائی جنرل سیکرٹری نے صوبائی حکومت، انسپکٹر جنرل پولیس سے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ اس قسم کے غیر ضروری احکامات سے گریز کیا جائے۔ انھوں نے کہا کہ ایسے نظر آ رہا ہے کہ پولیس کے کچھ افسران محرم الحرام کے دوران حالات کو خراب کرنے کی طرف لے جا رہے ہیں۔ ہم پر امن قوم ہیں، قانون کا احترام کرتے ہیں لیکن کسی کو عزاداری پر پابندی لگانے کا حق نہیں دیں گے۔ ہم نے تمام صورتحال کواپنے وکلاء کے ذریعے عدالت تک پہنچا دیا ہے۔

Read more...
25 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) مجلس وحدت مسلمین کراچی کے سیکرٹری جنرل میثم عابدی نے کہا ہے کہ بارہا متوجہ کرنے کے باوجود کراچی بھر میں جلوس عزا کی گزرگاہوں اور امام بارگاہوں و مساجد کے اطراف کچرے، گندگی کے ڈھیر، سیوریج کے پانی کی موجودگی، ٹوٹی ہوئی سڑکیں، گڑھوں کی بھرمار جیسے مسائل تاحال حل نہیں کئے جا سکے، محرم الحرام کے دوران ضلع ملیر میں کالا بورڈ، ملیر پندرہ، جعفر طیار سوسائٹی، غازی ٹاون، عمار یاسر سوسائٹی سمیت کراچی کی متعدد شاہرائیں ٹوٹی ہوئی اور گندگی و غلاظت سے بھری پڑی ہیں، سندھ بلدیات و شہری حکومتوں نے محرم سے پہلے یقین دہانی کرائی تھی کہ محرم الحرام سے قبل مجالس و جلوس عزاء کی گزرگاہوں بشمول شہر کی اہم شاہراوں سڑکوں کی ازسر نو تعمیرات و پیوند کاری سمیت صفائی ستھرائی اور لائٹنگ کے تمام مسائل حل کر دیئے جائیں گے، لیکن سندھ و شہری حکومت کے یہ دعوے محض طفل تسلی ثابت ہوئے۔ ان خیالات اظہار ایم ڈبلیو ایم کراچی کے سیکریٹری جنرل میثم عابدی سمیت عزاداری سیل میں شامل مولانا غلام محمد فاضلی، حسن عباس رضوی، احسن رضوی، عارف رضا، ثمر زیدی سمیت دیگر رہنماوں نے نیشنل ہائی وے ملیر پندرہ پر جاری احتجاجی مظاہرے و علامتی دھرنے سے خطاب میں کیا۔

احتجاجی مظاہرے و علامتی دھرنے میں مظاہرین نے بینرز و پلے کارڈ اٹھائے ہوئے تھے، جس پر سندھ و شہری حکومت کے خلاف نعرے درج تھے، جبکہ مظاہرین نے سندھ حکومت و شہری حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔ رہنماوں نے کہا کہ بلدیہ اور کے ایم سی کی اس عدم توجہی کے باعث یکم محرم الحرام سے مختلف علاقوں سے نکلنے والے جلوسوں میں شریک مومنین، مستورات، بزرگوں اور بچوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، ٹوٹی سڑکیں، گندگی کے ڈھیر او ر سوریج سے ابلتی ہوئی گندگی سندھ و شہری حکومت کی ”اعلی کارکردگی“ کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

انہوں نے کہا کہ متعلقہ حکام کی دانستہ غفلت نے شہریوں کی زندگی اجیرن کر رکھی ہے، متعدد بار اس حساس معاملے کی طرف توجہ مبذول کروائی گئی ہے لیکن متعلقہ حکام زبانی جمع خرچ سے کام چلا رہے ہیں، سندھ کے وزیراعلی و گورنر اور میئر نے عوامی مسائل سے خود کو بری الذمہ سمجھ رکھا ہے، حکومت کا یہ طرز عمل عوام سے انہیں دور کر دے گا۔ ایم ڈبلیو ایم کے رہنماوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ کمشنر کراچی انتظامی حوالے سے نااہل ہیں، انہیں فوری طور پر اپنے عہدے سے برطرف کیا جائے، فرائض سے پیشہ وارانہ غفلت کے مرتکب افراد کے خلاف بھی کارروائی کی جائے اور کراچی کی تمام شاہراوں اورمحلوں کی ہنگامی بنیادوں پر صفائی کے احکامات جاری کئے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں کالعدم دہشتگرد تنظیموں کی سرگرمیاں کھلے عام جاری ہیں، ان کے خلاف فوری آپریشن کیا جائے، صوبائی حکومت عزاداری و عزاداروں کیخلاف پرمٹ، لاوڈ اسپیکر ایکٹ کے نام پر عزاداروں کو تنگ کرنا بند کرے، محب وطن شیعہ علمائے کرام کو مجالس پڑھنے کی بیجا پابندیوں کو فوری ختم کیا جائے۔ دریں اثنا ایم ڈبلیو ایم کے احتجاجی مظاہرین سے ایم ڈی واٹر اینڈ سوریج بورڈ ہاشم رضا اور ڈی ایم سی چیئرمین نیئر رضا نے مذاکرات کئے اور انہیں یقین دھانی کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے ضلع ملیر کے ترقیاتی کاموں کو بہتر بنانے اور مسائل کے حل کیلئے 23 کروڑ روپے کے فنڈ سے انشاءاللہ یہ مسائل رواں ماہ میں جلد از جلد مکمل کر لئے جائیں گے اور 5 محرم الحرام کے جلوس سے قبل گندے پانی اور خستہ حال سڑکوں کی پیوند کاری کو بھی مکمل کر لیا جائے گا، حکومتی یقین دہانی اور مذاکرات کے بعد ایم ڈبلیو ایم کے پر امن احتجاجی مظاہرے و علامتی دھرنے کو ختم کر دیا گیا اور ٹریفک کی روانی کو بحال کر دیا گیا۔

Read more...
25 ستمبر 2017

امام حسین ؑ کے مقصد میں تحریفات کرنے والا امام حسین ؑ کا سب سے بڑا دشمن ہے ۔ امام موسیٰ صدر

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ)

امام حسین علیہ السلام کے دشمنوں کی تین قسمیں ہیں:
1۔ وہ جنہوں نے امام حسین علیہ السلام کو قتل کیا؛ یہ سب سے کم خطرناک دشمن ہیں، کیونکہ انھوں نے امام(ع) کے جسم کو نشانہ بنایا، جو محدود تھا۔
2۔ وہ دشمن جنہوں نے امام حسین علیہ السلام کے آثار نابود کرنے کی کوشش کی۔ آپ(ع) کی قبر کو ویران کیا، زائرین کو زیارت کے لئے آنے سے باز رکھا اور قبر کے اطراف میں رہنے والوں کو تنگ کیا۔ دشمنوں کی یہ قسم اول الذکر دشمن سے زیادہ خطرناک ہے لیکن یہ لوگ اپنے مقصد کے حصول میں ناکام رہے۔
3۔ تیسری قسم سب سے زيادہ خطرناک ہے۔ یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے امام حسین علیہ السلام کے اہداف و مقاصد میں تحریف کرنے کی کوشش کی اور ان کو منافع کمانے کا وسیلہ بنایا اور اس عظیم مشن سے نہایت سستے فوائد حاصل کرتے ہیں یا اس کو اپنے ذاتی مفاد کے لئے استعمال کرتے ہیں[یا اس میں بگاڑ پیدا کرتے ہیں اور اس میں نئی بدعتیں شامل کرتے ہیں یا کربلا اور امام حسین علیہ السلام سے متعلق بعض اشیاء کو پیام کربلا پر مقدم رکھتے ہیں یا پھر ایسے اعمال انجام دیتے اور رائج کرتے ہيں جن سے امام حسین علیہ السلام کا مشن بدنام ہونے کا خدشہ اور مذہب و دین کی سبکی ہوتی ہے]، یہ دشمن وہ ہیں جنہوں نے امام حسین علیہ السلام کے مشن کے اعلی ترین پہلو "یعنی تحریک حسینی" کو نشانہ بنایا ہے اور اس کو نیست و نابود کرنے کی سعی کررہے ہیں۔
میں خود سے بھی اور آپ سے بھی پوچھتا ہوں کہ ہم نے روز عاشور سے کیا فائدہ اٹھایا ہے؟ ہمیں اس سے کونسی منفعت ملی ہے؟ ہم نے سماجی سطح پر کیا فائدہ اٹھایا ہے اور ذاتی و انفرادی لحاظ سے کیا پایا ہے؟ ۔۔۔ اگر ہم نے کوئی فائدہ نہ اٹھایا ہو اور صرف روئے دھوئے ہوں تو میں آپ کو بتاتا ہوں کہ "ہم نے کوئی فائدہ نہیں اٹھایا ہے"۔ خود سے بھی اور آپ سے بھی پوچھتا ہوں کہ "ہم کس جماعت سے تعلق رکھتے ہیں کیا کہیں ان لوگوں میں سے تو نہیں ہیں جو صرف روتے ہیں اور [اور ایک بار پھر] امام حسین(ع) کو قتل کرتے ہیں؟

بےشک امام حسین(ع) اس وقت ہمارے درمیان نہیں ہیں کہ کوئی انہیں قتل کرے لیکن وہ چیزیں موجود ہیں جن کی عظمت اتنی ہے کہ امام حسین علیہ السلام جتنی عظیم ہستی نے ان کے لئے جان و تن اور اصحاب و خاندان کی قربانی دی: امام حسین(ع) کی عظمت و کرامت، امام حسین(ع) کے مقدسات۔۔۔[امام حسین(ع) کا پیغام اور امام حسین(ع) کی تعلیمات]؛
اگر ہم امام حسین(ع) کے لئے گریہ کریں لیکن ساتھ ساتھ باطل کی صف میں بھی کھڑے رہیں،
اگر ہم امام حسین(ع) کے لئے روئیں بھی اور جھوٹی گواہی بھی دیں،
اگر ہم امام حسین(ع) کے لئے روئیں بھی اور دشمنوں کو مدد بھی بہم پہنچائیں، اور اپنے معاشرے میں اختلاف اور تفرقہ بھی ڈالیں۔
اگر ہم امام حسین(ع) کے لئے گریہ بھی کریں اور ہمارے گناہوں میں مسلسل اضافہ بھی ہوتا رہے تو اس صورت میں ہم ان ہی لوگوں میں سے ہیں جو امام حسین(ع) کے لئے روتے بھی ہیں اور آپ(ع) کو قتل بھی کرتے ہيں کیونکہ اس صورت میں ہم کوشش کررہے ہوتے ہیں
کہ امام حسین(ع) کے ہدف و مقصد کو نیست و نابود کریں اور وہی مقصد جس کے جصول کے لئے امام حسین(ع) جتنی عظیم ہستی نے قربانی دی!
ان شاء اللہ کے ہم اس جماعت میں سے نہیں ہیں۔
جوالہ: کتاب سفر شہادت
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ترجمہ: فرحت حسین مہدوی

Read more...
25 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) آج 4 محرم الحرام کو ضلع ملتان میں علم و ذوالجناح کے کل 11 ماتمی جلوس برآمد کئے جائیں گے جن میں سے 7 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ جلوسوں میں سے 2 لائسنسی اور 9 روائتی جلوس شامل ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ملتان شہر اور گرد و نواح میں 8 جبکہ شجاع آباد میں 3 ماتمی جلوس نکالے گئے۔ آج 4 محرم الحرام کو ملتان شہر میں علم و ذوالجناح کا لائسنسی جلوس شام پانچ بجے آستانہ کمنگراں سے برآمد ہو کر حسین آگاہی، صرافہ بازار، پاک گیٹ اور پل شیدی لعل سے ہوتا ہوا رات گئے درگاہ حضرت بی بی پاک دامنہ پر اختتام پذیر ہوگا۔ اسی طرح امام بارگاہ مقیم شاہ، محلہ بیگی، محلہ مچھر بھیر، محلہ طوطل پورہ اور سوتری وٹ سے بھی چھوٹے بڑے ماتمی جلوس برآمد کئے جائیں گے۔

آج 4 محرم الحرام کو ضلع ملتان میں کل 158 مجالس عزا برپا ہوں گی جن میں سے 49 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ ملتان شہر اور نواحی علاقوں میں 127 قادرپور راواں میں 5، بدھلہ سنت میں 1، بستی ملوک میں 2، شجاع آباد میں 19، راجہ رام میں 2 اور جلال پور میں 6 مجالس عزا منعقد ہوں گی۔

Read more...
24 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) شمال مغربی ایران کے شہر گیلان میں ایک شہید محافظ حرم کے چالیسویں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے جنرل قاسم سلیمانی کا کہنا تھا کہ امام حسین علیہ السلام کا تعلق صرف شیعہ مسلمانوں سے نہیں ہے بلکہ پوری دنیائے انسانیت سے ہے اور دیگر مذاہب کی عظیم ہستیوں، دانشوروں اور علما نے امام حسین کو خراج عقیدت پیش کیا ہے اوران کی پیروی کی دعوت دی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ایک عیسائی ادیب عیسائیوں کو مخاطب کرکے کہتا ہے کہ عیسائیت حسین کے بغیر مکمل نہیں ہوسکتی بلکہ کوئی بھی دین چاہے وہ آسمانی ہو یا غیر آ‎سمانی ہو، اس میں اگر حسین نہیں ہے تو وہ زمینی دین ہے اور بہشت سے دور رہے گا۔

سردار قاسم سلیمانی نے معاشرے پر شہیدوں کی تاثیر کو بہت اہم اور مثبت قرار دیا اور کہا کہ سبھی افراد جو مدافعین حرم کے عنوان سے شام کے محاذ پر موجود ہیں، یہ سب رضاکارانہ طور پر دفاع حرم کے لئے گئے ہیں۔ انھوں نے کامیابی کے دو بنیادی عناصر کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کامیابی کے دو بنیادی عناصر ہیں ۔ ایک قیادت اور دوسرے فداکار مجاہد۔

جنرل سلیمانی نے خطے میں دشمنوں کی تفرقہ اندازی کی کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دشمن یہ چاہتے تھے کہ شام اورعراق میں دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کو شیعہ و سنی جنگ کا نام دیا جائے مگر دشمن کی یہ سازش ناکام رہی اور تفرقے کے بجائے شیعہ اور سنی اتحاد مستحکم تر ہوا ہے کیونکہ شیعہ مدافعین حرم نے براداران اہلسنت کی ناموس اورعزت کے دفاع میں قربانیاں دیں اور اپنا خون بہایا ہے جس کے نتیجے میں شیعہ اور سنی اتحاد محکم تر ہوا ہے۔

القدس بریگیڈ کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی نے کہا کہ داعش کا خاتمہ قریب ہے اور میں واضح الفاظ میں کہتا ہوں کہ ہم دو ماہ کے بعد اس شجرہ ملعونہ کے خاتمے کا جشن منائیں گے۔

Read more...
24 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے 3 محرم الحرام کے حوالے سے منعقد مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج عراقی حکومت اور عوام نے داعش کو پسپا کردیا ہے اور داعش پر عراقی حکومت و عوام کی فتح قریب ہے، اسے اللہ تعالی کی نصرت اور یاری کہتے ہیں۔

سید حسن نصر اللہ نے داعش کو امریکہ کی طرف سے تشکیل دینے پر مبنی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ایک سال قبل بیان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی حکام نے واضح اعتراف کیا ہے کہ انھوں نے داعش کو تشکیل دیا اور آج وہ دہشت گردی کا الزام دوسروں پر عائد کررہے ہیں اگر عراق، ایران، شام اور لبنان کی اقوام اپنے جوانوں اور عزیزوں کی قربانی پیش نہ کرتے تو داعش نے آج سب کے سر کاٹنے تھے، لوگوں کی ماؤں اور بیٹیوں کو کنیز بنانا تھا اوران کی ناموس کی بے عزتی اور توہین کرنی تھی۔

سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ اسرائیل اور داعش میں کوئی فرق نہیں اگر حزب اللہ لبنان نے اسرائیل کی توسیع پسندانہ پالیسی کو نہ روکا ہوتا تو آج اسرائیل لبنان کی سرزمین پر یہودی بستیاں تعمیر کرتا اور لبنان کے عوام آج ملک کے اندر یا باہر فلسطینیوں کیطرح مہاجر کیمپوں میں زندگی بسر کرتے۔

سید حسن نصر اللہ نے بعض عرب رہنماؤں کو امریکی اور اسرائیلی غلام قرار دیتے ہوئے اور ان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان عرب حکمرانوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں حتی اسرائیل کے غیر قانونی ایٹمی ہتھیاروں کی طرف اشارہ بھی نہیں کیا۔ ان کے دلوں میں خوف خدا نہیں بلکہ امریکہ اور اسرائیل کا خوف ہے اور یہ حرمین الشریفین کی توہین کرتے ہوئے خود کو خادم الحرمین الشریفین کہتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ کربلا نے ہمیں عزت، سرافرازی اور سربلندی کا راستہ دکھایا ہے اور ہم کربلا والوں کے راستے پر گامزن ہیں اور ہمارے اندر اس دور کے ظالم یزیدیوں سے ٹکرانے کا عزم و حوصلہ موجود ہے۔

Read more...
24 ستمبر 2017

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) تیس ممالک سے بوہری اسماعیلی برادری کے افراد، محرم الحرام کے مرکزی اجتماعات میں شرکت کے لیے پاکستان کے شہر کراچی پہنچ گئے ہیں۔

توقع کی جا رہی ہے کہ یکم محرم سے عاشورا تک بوہری برادری کے تقریباً پچاس ہزار افراد کراچی میں موجود ہوں گے جہاں وہ سید الشہدا امام حسین علیہ السلام کی عزاداری میں شرکت کریں گے۔

راولپنڈی اور اسلام آباد سمیت پاکستان کے دیگر شہروں سے بھی بوہری برادری کے ہزاروں لوگ عزاداری امام حسین علیہ السلام میں شرکت کے لیے کراچی پہنچ گئے ہیں۔

پاکستان میں اسماعیلی بوہری برادری کی مجالس عزا کی حفاظت کے لیے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔ سن دو ہزار بارہ اور دو ہزار پندرہ میں عزاداری کے دوران اسماعیلی بوہری برادری کو تکفیری دہشت گردوں نے اپنے حملوں کا نشانہ بنایا تھا۔
قابل ذکر ہے کہ پاکستان کی شیعہ برادری نے محرم الحرام شروع ہوتے ہی ملک بھر میں سید الشہدا حضرت امام حسین علیہ السلام اور آپ کے بہتّر ساتھیوں کی یاد میں عزاداری کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔

Read more...
24 ستمبر 2017

محرم وہ مہینہ ہے جب حضرت امام حسین(ع) نے میدان کربلا میں حق و باطل، علم و جہل، رضائے الٰہی اور خواہشات نفسانی کے درمیان حد فاصل قائم کرنے والی وہ عظیم و بے مثال قربانی پیش کی کہ محرم الحرام کی نسبت ہی امام عالی مقام سے ہوگئی۔ حضرت امام حسین (ع) کی ذات اقدس اور مقصد شہادت اتنا بلند ہے کہ ضروری نہیں ہر ذہن ان فضائل، مراتب اور راہ خدا میں اس بے مثال قربانی کا احاطہ کرسکے، جو خاندان نبوت نے میدان کربلا میں پیش کی۔

امام عالی مقام حضرت امام حسین علیہ السلام اور ان کے اصحاب با وفا کے غم میں مساجد، امام بارگاہوں اور گھروں میں فرش عزائے سید الشہدا بچھ گئے ہیں اور ہر طرف یاحسین کی صدائیں بلند ہیں۔

مساجد اور امام بارگاہوں سے ذاکرین اور خطبا کی تقریروں کی آوازیں سنائی دینے لگی ہیں اور ہر طرف ایک ہی آواز یعنی حسین زندہ باد کی صدا سنائی دے رہی ہے-

کربلائے معلی سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق عاشقان امام مظلوم کربلا دنیا کے گوشہ وکنار سے بڑی تعداد میں کربلائے معلی پہنچ رہے ہیں۔

شیعہ نیوز غم و اندوہ کے اس موقع پراپنے تمام سامعین، ناظرین اورعزاداران امام عالی مقام کی خدمت میں تعزیت و تسلیت پیش کرتا ہے۔

Read more...
صفحہ 1 کا 1673