زوردار دھماکہ 4نو جوان شہید

  • پیر, 16 اپریل 2018 17:43

شیعہ نیوز(پاکستان شیعہ خبر رساں ادارہ ) خیال رہے کہ فلسطین کی یہ جماعت اسرائیل کے خلاف استعمال کیے جانے والے ہتھیاروں کے حادثاتی دھماکوں کے نتیجے میں ہونے والی ہلاکتوں کے لیے ایسے الفاظ استعمال کرتی ہے۔غزہ کی وزارت صحت نے حادثے میں چار افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی، رفاہ کے علاقے میں موجود طبی حکام نے بتایا کہ دھماکا اسرائیل کی جانب سے کیا گیا تھا جبکہ اسرائیلی فوجی ترجمان کا کہنا ہے کہ اس حادثے میں فوج ملوث نہیں۔اسرائیل کے فوجی ترجمان کا کہنا تھا کہ ‘حادثے کے متعلق گردش کرنے,

والی افواہوں کے برعکس میں بتاتا ہوں کہ اسرائیلی دفاعی فورسز کو رفاہ کے علاقے میں ہونے والے کسی حادثے کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔غزہ کی پٹی پر 30 مارچ سے تشدد میں اضافہ دیکھنے میں آیا جب فلسطینیوں نے اسرائیلی حدود سے منسلک علاقوں میں احتجاج شروع کیا۔اسرائیلی فوج اب تک غزہ میں 31 فلسطینیوں کو شہید کرچکی ہے اور احتجاج شروع ہونے کے بعد سے سینکڑوں کو فائرنگ سے زخمی بھی کرچکی ہے، جس کیے بعد اسے عالمی سطح پر سخت تنقید کا سامنا ہے۔ہفتے کے روز,

اسرائیل اور فلسطین کے سرحدی علاقوں میں احتجاج نہیں کیا گیا۔فلسطینی مظاہرین نے سرحدی علاقوں میں ’واپسی کی تحریک‘ شروع کر رکھی ہے اور سلسلے میں 3 ہفتوں سے سرحدی علاقے میں خیمہ کیمپ قائم کر رکھا ہے، جس کا مقصد اپنے آبائی گھروں میں واپس جانا ہے جو اب اسرائیل کا حصہ ہیں۔دوسری جانب اسرائیل نے غزہ کے سرحد علاقے کو نو گو ایریا قرار دے دیا ہے۔واضح رہے کہ اسرائیل نے سال 2005 میں غزہ سے اپنے فوجی دستوں اور ٹھکانوں کو ختم کردیا تھا۔اس کے بعد سے فلسطین کا,

محصور علاقہ اسلامی تحریک حماس کے زیرِ انتظام ہے جسے اسرائیل اور دیگر مغربی ممالک ایک دہشت گرد جماعت قرار دے دیا۔اسرائیل نے سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر اپنے ساحلی علاقے میں فلسطینیوں کی نقل و حرکت اور سامان کی ترسیل پرسخت پابندیاں عائد کررکھی ہیں۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.