دو ماہ بعد داعش کے خاتمے کا جشن منائیں گے، جنرل قاسم سلیمانی

  • اتوار, 24 ستمبر 2017 18:35

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) شمال مغربی ایران کے شہر گیلان میں ایک شہید محافظ حرم کے چالیسویں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے جنرل قاسم سلیمانی کا کہنا تھا کہ امام حسین علیہ السلام کا تعلق صرف شیعہ مسلمانوں سے نہیں ہے بلکہ پوری دنیائے انسانیت سے ہے اور دیگر مذاہب کی عظیم ہستیوں، دانشوروں اور علما نے امام حسین کو خراج عقیدت پیش کیا ہے اوران کی پیروی کی دعوت دی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ایک عیسائی ادیب عیسائیوں کو مخاطب کرکے کہتا ہے کہ عیسائیت حسین کے بغیر مکمل نہیں ہوسکتی بلکہ کوئی بھی دین چاہے وہ آسمانی ہو یا غیر آ‎سمانی ہو، اس میں اگر حسین نہیں ہے تو وہ زمینی دین ہے اور بہشت سے دور رہے گا۔

سردار قاسم سلیمانی نے معاشرے پر شہیدوں کی تاثیر کو بہت اہم اور مثبت قرار دیا اور کہا کہ سبھی افراد جو مدافعین حرم کے عنوان سے شام کے محاذ پر موجود ہیں، یہ سب رضاکارانہ طور پر دفاع حرم کے لئے گئے ہیں۔ انھوں نے کامیابی کے دو بنیادی عناصر کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کامیابی کے دو بنیادی عناصر ہیں ۔ ایک قیادت اور دوسرے فداکار مجاہد۔

جنرل سلیمانی نے خطے میں دشمنوں کی تفرقہ اندازی کی کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دشمن یہ چاہتے تھے کہ شام اورعراق میں دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کو شیعہ و سنی جنگ کا نام دیا جائے مگر دشمن کی یہ سازش ناکام رہی اور تفرقے کے بجائے شیعہ اور سنی اتحاد مستحکم تر ہوا ہے کیونکہ شیعہ مدافعین حرم نے براداران اہلسنت کی ناموس اورعزت کے دفاع میں قربانیاں دیں اور اپنا خون بہایا ہے جس کے نتیجے میں شیعہ اور سنی اتحاد محکم تر ہوا ہے۔

القدس بریگیڈ کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی نے کہا کہ داعش کا خاتمہ قریب ہے اور میں واضح الفاظ میں کہتا ہوں کہ ہم دو ماہ کے بعد اس شجرہ ملعونہ کے خاتمے کا جشن منائیں گے۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.