مارکیٹوں میں دستیاب اشیائے خوردنوش کا ازسرنو معیار چیک کیا جائے ،شیخ مرزا علی

  • پیر, 12 فروری 2018 12:09

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ)اسلامی تحریک پاکستان کے صوبائی جنرل سکریٹری شیخ مرزا علی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں امراض قلب میں خطرناک حد تک اضافہ انتہائی تشویشناک ہونے کے ساتھ صوبائی حکومت اور مقامی انتظامیہ کیلئےبہت بڑا چیلنج بھی ہے اپنے ایک بیان میں شیخ مرزا علی نے کہا ہے کہ صحت سے وابستہ اداروں کے محتاط سروے کے مطابق جی بی میں امراض قلب کی شرح ساٹھ فیصد تک بڑ چکی ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ سو میں سے ساٹھ افراد امراض قلب کے خطرات سے دوچار ہیں جو ایک قومی المیہ ہے اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ صوبائی حکومت اور صحت کے متعلقہ محکمے امراض قلب میں اضافے کو قومی المیہ قراردے کر ہنگامی اور ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کریں اور ساتھ ساتھ تمام سیاسی ،مذہبی وسماجی تنظیمیں اقتدار کی جنگ لڑنے کے بجائے قومی خدمت پر یقین رکھیں اور گلگت بلتستان کے عوام کو امراض قلب جیسی مہلک بیماری سے نجات دلانے میں اپنا کردار ادا کریں کسی بھی معاشرے میں ترقیاتی منصوبوں کی افادیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا مگر صحت مند معاشرہ ہی ترقیاتی منصوبوں سے مستفید ہوسکتا ہے اس وقت جی بی کے عوام دل کی بیماری کے بڑھتے ہوئے اثرات سے ذہنی اذیت کا شکار ہیں ایسے میں سیاسی ورکروں کی جانب سے آئے دن اقتدار کے جنگی بیانات سے واضح ہوتا ہے قومی صحت اور ترقی سے انہیں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔اسلامی تحریک پاکستان کے صوبائی جنرل سکریٹری شیخ مرزا علی نے کہا مضر صحت اشیاءخوردونوش مارکیٹ تک پہنچنا ایک لمحہ فکریہ ہے اور غفلت کے مرتکب ادارے قومی مجرم کہلانے کے حقدارہیں گلگت بلتستان کی ماکیٹوں میں دستیاب اشیاءخوردونوش کا معیار چیک کیا جائے تو متعلقہ کمپنیاں اور ہول سیل ڈسٹری بیوٹرز ایسے اشیاء کو منافع بخش کاروبار قرار دیتے ہیں کو کھلی دہشتگردی اور معاشرے کو قتل کرنے کے مترادف ہے اور ایسی کمپنیوں کو آپریشن ردالفسادکے زمرے میں لایا جانا چاہئے ۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.